Dialogue

Vocabulary

Learn New Words FAST with this Lesson’s Vocab Review List

Get this lesson’s key vocab, their translations and pronunciations. Sign up for your Free Lifetime Account Now and get 7 Days of Premium Access including this feature.

Or sign up using Facebook
Already a Member?

Lesson Notes

Unlock In-Depth Explanations & Exclusive Takeaways with Printable Lesson Notes

Unlock Lesson Notes and Transcripts for every single lesson. Sign Up for a Free Lifetime Account and Get 7 Days of Premium Access.

Or sign up using Facebook
Already a Member?

Lesson Transcript

پیر سہاوا ایک مقبول سیاحتی مقام ہے جو پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد کے ٹھیک باہر کوہ مارگلہ کی چوٹی پر واقع ہے۔
یہ منال گاؤں میں 5,000 فٹ کی اونچائی پر واقع ہے، جو کہ ہری پور ضلع میں ہے۔
اپنی اعلی بلندی کی وجہ سے یہ تفریحی مقام دیہی علاقوں کا دلکش نظارہ پیش کرتا ہے۔
مقامی لوگ بھی پکنک منانے، پرندوں کو دیکھنے اور اس کی قدرتی آبادی میں جنگلاتی زندگی کا نظارہ کرنے کے لئے پیر سہاوا جاتے ہیں۔
پیر سہاوا کی تعمیر 2006 میں مکمل ہوئی۔
اس تفریحی مقام پر بہت کم برف باری ہوتی ہے، کیونکہ تعمیری کام کی تکمیل کے تقریبا چھہ سالوں بعد تک یہاں پہلی چند انچ کی برف باری نہیں ہوئی تھی۔
پیر سہاوا کو اسلام آباد کا بلند ترین سیاحتی مقام ہونے کا امتیاز بھی حاصل ہے۔
اسلام آباد سے، اس تفریحی مقام تک ایک گھمائودار سڑک کے ذریعہ پہنچا جا سکتا ہے جو پہاڑ پر اوپر جاتی ہے اور علاقے کا ایک حیرت انگیز نظارہ بھی پیش کرتی ہے۔
پہاڑ کی چوٹی پر موجود پیر سہاوا پر پہنچ کر، سیاح پرسکون جنگل سے بھرپور علاقے کا لطف لیتے ہیں جہاں مختلف قسم کے پرندے اور دیگر جانور رہتے ہیں۔
ایک ریستوران بھی ہے جس کو منال ریستوران کہا جاتا ہے جو پہاڑ کی چوٹی پر واقع ہے۔
ریستوران کے چبوترے دن کے وقت اسلام آباد کے مسلسل نظارے اور رات میں شہر کی روشنی کے دلکش نظارے پیش کرتے ہیں۔
مانسون کی آمد کے بعد، پیر سہاوا کی بل کهاتی پہاڑیاں ہری بھری ہو جاتی ہیں۔
جو لوگ زیادہ مہم جو ہیں اور پہاڑ چڑھنا چاہتے ہیں وہ ایسا کر سکتے ہیں کیونکہ وہاں ایک راستہ بھی ہے۔
تاہم، پہاڑ چڑهنے والے جب پہاڑ پر چڑھتے ہیں تو وہ اپنے آپ کو بیش قیمتی مقامات میں پاتے ہیں کیونکہ یہ راستہ تقریبا عمودی ہے جس کی شروعات سیدپور اسلام آباد کی چھوٹی سی بستی سے ہوتی ہیں۔

1 Comment

Hide
Please to leave a comment.
😄 😞 😳 😁 😒 😎 😠 😆 😅 😜 😉 😭 😇 😴 😮 😈 ❤️️ 👍
Sorry, please keep your comment under 800 characters. Got a complicated question? Try asking your teacher using My Teacher Messenger.
Sorry, please keep your comment under 800 characters.

UrduPod101.com
Friday at 6:30 pm
Your comment is awaiting moderation.

پیر سہاوا ایک مقبول سیاحتی مقام ہے جو پاکستان کے دارالحکومت اسلام آباد کے ٹھیک باہر کوہ مارگلہ کی چوٹی پر واقع ہے۔
یہ منال گاؤں میں 5,000 فٹ کی اونچائی پر واقع ہے، جو کہ ہری پور ضلع میں ہے۔
اپنی اعلی بلندی کی وجہ سے یہ تفریحی مقام دیہی علاقوں کا دلکش نظارہ پیش کرتا ہے۔
مقامی لوگ بھی پکنک منانے، پرندوں کو دیکھنے اور اس کی قدرتی آبادی میں جنگلاتی زندگی کا نظارہ کرنے کے لئے پیر سہاوا جاتے ہیں۔
پیر سہاوا کی تعمیر 2006 میں مکمل ہوئی۔
اس تفریحی مقام پر بہت کم برف باری ہوتی ہے، کیونکہ تعمیری کام کی تکمیل کے تقریبا چھہ سالوں بعد تک یہاں پہلی چند انچ کی برف باری نہیں ہوئی تھی۔
پیر سہاوا کو اسلام آباد کا بلند ترین سیاحتی مقام ہونے کا امتیاز بھی حاصل ہے۔
اسلام آباد سے، اس تفریحی مقام تک ایک گھمائودار سڑک کے ذریعہ پہنچا جا سکتا ہے جو پہاڑ پر اوپر جاتی ہے اور علاقے کا ایک حیرت انگیز نظارہ بھی پیش کرتی ہے۔
پہاڑ کی چوٹی پر موجود پیر سہاوا پر پہنچ کر، سیاح پرسکون جنگل سے بھرپور علاقے کا لطف لیتے ہیں جہاں مختلف قسم کے پرندے اور دیگر جانور رہتے ہیں۔
ایک ریستوران بھی ہے جس کو منال ریستوران کہا جاتا ہے جو پہاڑ کی چوٹی پر واقع ہے۔
ریستوران کے چبوترے دن کے وقت اسلام آباد کے مسلسل نظارے اور رات میں شہر کی روشنی کے دلکش نظارے پیش کرتے ہیں۔
مانسون کی آمد کے بعد، پیر سہاوا کی بل کهاتی پہاڑیاں ہری بھری ہو جاتی ہیں۔
جو لوگ زیادہ مہم جو ہیں اور پہاڑ چڑھنا چاہتے ہیں وہ ایسا کر سکتے ہیں کیونکہ وہاں ایک راستہ بھی ہے۔
تاہم، پہاڑ چڑهنے والے جب پہاڑ پر چڑھتے ہیں تو وہ اپنے آپ کو بیش قیمتی مقامات میں پاتے ہیں کیونکہ یہ راستہ تقریبا عمودی ہے جس کی شروعات سیدپور اسلام آباد کی چھوٹی سی بستی سے ہوتی ہیں۔